April 22, 2024

Warning: sprintf(): Too few arguments in /www/wwwroot/pldtvibe.com/wp-content/themes/chromenews/lib/breadcrumb-trail/inc/breadcrumbs.php on line 253

سوڈانی فوج کی جانب سے ام درمان شہرکوکلیئر کرنے کے پہلے مرحلے کی تکمیل اور ریپڈ سپورٹ فورسز کو وہاں سے نکال باہر کیے جانے کے بعد “العربیہ” اور “الحدث” کی کیمرہ ٹیم نے المسالمہ محلے کے اندرواقع مشہور میری جارجس چرچ کے اندر سے کوریج کی۔ یہ گرجا گھرسوڈانی فوج اور اس کی حریف سریع الحرکت فوسز کے درمیان لڑائی کے دوران بری طرح ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوگیا تھا۔

چرچ آف میری جارجس کو ام درمان شہرمیں جنگ سے متاثر ہونے والے نمایاں مذہبی اداروں میں سے ایک سمجھا جاتا ہے۔

ذرائع نے ’العربیہ‘ اور ’الحدث‘ کو بتایا کہ ریپڈ سپورٹ فورسزگذشتہ جولائی سے میری جارجس چرچ میں داخل ہوئی تھی اور گزشتہ دسمبر میں اس سے نکل گئی تھی۔

اس تناظرمیں سوڈانی خودمختاری کونسل کے سربراہ اور فوج کے کمانڈر عبدالفتاح البرہان نے ہفتے کے روز تصدیق کی کہ “الکرامہ آپریشن اس وقت تک جاری رہے گا جب تک کہ ریپڈ سپورٹ فورسز اور ان کی مدد کرنے والوں کو شکست نہیں دی جاتی”۔

شمالی سوڈان میں دریائے نیل کی ریاست شیندی میں تیسری انفنٹری ڈویژن کے افسروں اور سپاہیوں کے سامنے تقریر کرتے ہوئے البرہان نے کہا کہ سوڈانی فوج “جب تک [آر ایس ایف] کے باغیوں کا خاتمہ نہیں کر دیتی ہتھیار نہیں چھوڑے گی‘‘۔

البرہان نے ریپڈ سپورٹ فورسز سے بھی مطالبہ کیا کہ وہ “عقل سے کام لیں الجزیرہ اور خرطوم ریاستوں سے نکل جائیں”۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *